سورہ معارج

ویکی شیعہ سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
حاقہ سورۂ معارج نوح
سوره معارج.jpg
ترتیب کتابت: 70
پارہ : 29
نزول
ترتیب نزول: 77 یا 79
مکی/ مدنی: مکی
اعداد و شمار
آیات: 44
الفاظ: 271
حروف: 972

سورہ معارج قرآن کی سترویں اور مکی سورت ہے۔ یہ سورت قرآن کے 29ویں پارے میں واقع ہے۔ اس سورت کا نام معارج ہے جس کے معنی "درجات" کے ہیں اور یہ نام اس کی تیسری آیت سے لیا گیا ہے۔ اس سورت کا آغاز ایک ایسے شخص کی داستان سے ہوتا ہے جس نے اپنے لئے اللہ سے عذاب کا تقاضا کیا۔ بعدازاں قیامت کے اوصاف کا تذکرہ کرتے ہوئے اس دن مؤمنین اور کافروں کے حالات بیان کئے گئے ہیں۔ آخر میں مشرکین اور کافروں کو خبردار کراتے ہوئے انہیں قیامت سے ڈرایا جاتا ہے۔

اس سورت کی ابتدائی تین آیتوں کی شأن نزول کے بارے میں آیا ہے کہ یہ آیتیں غدیر خم کے واقعے میں امام علیؑ کی ولایت کے اعلان کو نہ ماننے والے شخص کے بارے میں نازل ہوئی ہیں۔ اس سورت کی تلاوت کے بارے میں پیغمبر اکرمؐ سے منقول ہے کہ جو شخص سورہ معارج کی تلاوت کرے گا خدا اسے امانت کی رعایت، عہد و پیمان کی پاسداری اور نماز کی حفاظت کرنے والے شخص کا ثواب عطا کرے گا۔