مسبحات

ویکی شیعہ سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

مُسَبِّحات، قرآن کی ان سورتوں کو کہا جاتا ہے جن کی ابتداء خدا کی تسبیح و تقدیس سے ہوئی ہے۔ مسبحات میں یہ سات سورتیں اِسراء، حَدید، حَشْر، صَفْ، جمعہ، تَغابُن اور اَعْلی شامل ہیں، جن کا آغاز سبح یا اس کے مشتقات کے ساتھ ہوتا ہے۔ البتہ یہ کہ مسبحات میں یہ تمام سورہ شامل ہیں یا نہیں؟ اس بارے میں اختلاف ہے۔ اصول دین کے بارے میں بحث ان سورتوں کے مشترکات میں سے ہے۔

مـَنْ قَرَأَ الْمُسَبِّحَاتِ كُلَّهَا قَبْلَ أَنْ يَنَامَ لَمْ يَمُتْ حَتَّى يُدْرِكَ الْقَائِمَ وَ إِنْ مَاتَ كَانَ فِي جِوَارِ مُحَمَّدٍ النَّبِيِّ (ص) (ترجمہ: جو شخص رات کو سونے سے پہلے مسبحات کی تلاوت کرے، اسے قائم آل محمد کو درک کئے بغیر موت نہیں آئے گی اور موت آنے کی صورت میں وہ رسول خداؐ کے ساتھ محشور ہوگا۔ صدوق، ثواب الاعمال و عقاب الاعمال،۱۳۷۳ش، ص۱۳۸)

وجہ تسمیہ

مُسَبِّحات قرآن کریم کی ان سورتوں کو کہا جاتا ہے جن کی ابتداء خدا کی تسبیح سے ہوتی ہے۔[1] تسبیح کے معنی تنزیہ[2] و تقدیس کے ہیں اور خدا کی تسبیح سے مراد، خدا کو ہر بدی و زشتی سے دور سمجھنا ہے۔[3]

مصادیق

مسبحات کی فضیلیت بیان کرنے والی احادیث میں ان سورتوں کا نام نہیں لیا گیا ہے۔ اسی وجہ سے ان کی تعداد کے بارے میں علماء، مفسرین اور ماہرین علوم قرآن کے درمیان اختلاف پایا جاتا ہے: