سورہ مدثر

ویکی شیعہ سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
مزمل سورۂ مدثر قیامہ
سوره مدثر.jpg
ترتیب کتابت: 74
پارہ : 29
نزول
ترتیب نزول: 4
مکی/ مدنی: مکی
اعداد و شمار
آیات: 56
الفاظ: 256
حروف: 1036

سورہ مدثر [سُورَةُ الْمُدَّثِّر] ترتیب مصحف کے لحاظ سے قرآن کی چوہترویں اور ترتیب نزول کے لحاظ سے چوتھی سورت ہے۔ اس سورت کو اس مناسبت سے سورہ مدثر کہا جاتا ہے کہ اس کا آغاز "يَا أَيُّهَا الْمُدَّثِّرُ" سے ہوتا ہے جو حضرت محمد(ص) سے خطاب ہے۔

سورہ مدثر، کوائف

  • یہ خطابی سورتوں میں دسویں نمبر پر ہے کیونکہ اس کا آغاز خطاب "يا ايها المدثر" (اے چادر اوڑھ کر لیٹنے والے) سے ہوتا ہے۔
  • سورہ مدثر چھوٹی سورتوں میں شمار ہوتی ہے اور مفصلات کے زمرے میں آتی ہے۔
  • اس سورت کی آیات کی تعداد 56 اور ایک قول کے مطابق 55 ہے لیکن اول الذکر عدد مشہور و معمول ہے۔
  • اس سورت کے الفاظ کی تعداد 256 اور حروف کی تعداد 1036 ہے۔
  • ترتیب مصحف کے لحاظ سے قرآن کی چوہترویں سورت اور ترتیب نزول کے لحاظ سے چوتھی سورت ہے۔
  • یہ سورت مکی ہے۔
  • سورہ مدثر خطاب سورتوں میں دسویں سورت ہے۔
  • حجم اور کیفیت کے لحاظ سے چھوٹی سورت ہے اور مفصلات کے زمرے میں آتی ہے۔
  • یہ سورت انتیسویں پارے میں مندرج ہے۔

اس سورت میں تین قَسمیں آئی ہیں:

كَلَّا وَالْقَمَرِ ﴿32﴾ وَاللَّيْلِ إِذْ أَدْبَرَ ﴿33﴾ وَالصُّبْحِ إِذَا أَسْفَرَ ﴿34﴾ (ترجمہ: ہرگز نہیں قسم ہے چاند کی (32) اور رات کی جب وہ پیٹھ پھرائے (33) اور صبح کی جب وہ روشن ہو (34)) [ سورہ مدثر–32 تا 34]

مفاہیم

  • اس سورت کا آغاز قیام اور کافروں کے انذار، تکبیر رب متعال، طہارت و پاکیزگی کے حکم اور ظاہری اور باطنی آلودگیوں سے دوری کے حکم سے ہوتا ہے۔
  • اس میں اس کے ایک منکر ولید بن مغیرہ کو شدید انداز سے اشارے کئے گئے ہیں اور اس کے طعن و تکذیب کا جواب دیا گیا ہے۔
  • اس سورت میں مسئلۂ معاد اور جنتیوں اور دوزخیوں کی خصوصیات بیان کی گئی ہیں۔
  • یہ سورت متکبر اور مستکبر انسانوں کی توصیف کرتے ہوئے انسان کے نیک و بد اعمال کو اس کے آخری انجام کا معیار سمجھتی ہے۔
  • اشارہ کیا گيا ہے کہ بخشش کو بڑی پاداش کی امید سے انجام نہیں دینا چاہئے۔[1]

متن سورہ

سورہ مدثر مکیہ ـ نمبر 74 ـ آیات 56 ـ ترتیب نزول 4
بِسْمِ اللّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيمِ

يَا أَيُّهَا الْمُدَّثِّرُ ﴿1﴾ قُمْ فَأَنذِرْ ﴿2﴾ وَرَبَّكَ فَكَبِّرْ ﴿3﴾ وَثِيَابَكَ فَطَهِّرْ ﴿4﴾ وَالرُّجْزَ فَاهْجُرْ ﴿5﴾ وَلَا تَمْنُن تَسْتَكْثِرُ ﴿6﴾ وَلِرَبِّكَ فَاصْبِرْ ﴿7﴾ فَإِذَا نُقِرَ فِي النَّاقُورِ ﴿8﴾ فَذَلِكَ يَوْمَئِذٍ يَوْمٌ عَسِيرٌ ﴿9﴾ عَلَى الْكَافِرِينَ غَيْرُ يَسِيرٍ ﴿10﴾ ذَرْنِي وَمَنْ خَلَقْتُ وَحِيدًا ﴿11﴾ وَجَعَلْتُ لَهُ مَالًا مَّمْدُودًا ﴿12﴾ وَبَنِينَ شُهُودًا ﴿13﴾ وَمَهَّدتُّ لَهُ تَمْهِيدًا ﴿14﴾ ثُمَّ يَطْمَعُ أَنْ أَزِيدَ ﴿15﴾ كَلَّا إِنَّهُ كَانَ لِآيَاتِنَا عَنِيدًا ﴿16﴾ سَأُرْهِقُهُ صَعُودًا ﴿17﴾ إِنَّهُ فَكَّرَ وَقَدَّرَ ﴿18﴾ فَقُتِلَ كَيْفَ قَدَّرَ ﴿19﴾ ثُمَّ قُتِلَ كَيْفَ قَدَّرَ ﴿20﴾ ثُمَّ نَظَرَ ﴿21﴾ ثُمَّ عَبَسَ وَبَسَرَ ﴿22﴾ ثُمَّ أَدْبَرَ وَاسْتَكْبَرَ ﴿23﴾ فَقَالَ إِنْ هَذَا إِلَّا سِحْرٌ يُؤْثَرُ ﴿24﴾ إِنْ هَذَا إِلَّا قَوْلُ الْبَشَرِ ﴿25﴾ سَأُصْلِيهِ سَقَرَ ﴿26﴾ وَمَا أَدْرَاكَ مَا سَقَرُ ﴿27﴾ لَا تُبْقِي وَلَا تَذَرُ ﴿28﴾ لَوَّاحَةٌ لِّلْبَشَرِ ﴿29﴾ عَلَيْهَا تِسْعَةَ عَشَرَ ﴿30﴾ وَمَا جَعَلْنَا أَصْحَابَ النَّارِ إِلَّا مَلَائِكَةً وَمَا جَعَلْنَا عِدَّتَهُمْ إِلَّا فِتْنَةً لِّلَّذِينَ كَفَرُوا لِيَسْتَيْقِنَ الَّذِينَ أُوتُوا الْكِتَابَ وَيَزْدَادَ الَّذِينَ آمَنُوا إِيمَانًا وَلَا يَرْتَابَ الَّذِينَ أُوتُوا الْكِتَابَ وَالْمُؤْمِنُونَ وَلِيَقُولَ الَّذِينَ فِي قُلُوبِهِم مَّرَضٌ وَالْكَافِرُونَ مَاذَا أَرَادَ اللَّهُ بِهَذَا مَثَلًا كَذَلِكَ يُضِلُّ اللَّهُ مَن يَشَاء وَيَهْدِي مَن يَشَاء وَمَا يَعْلَمُ جُنُودَ رَبِّكَ إِلَّا هُوَ وَمَا هِيَ إِلَّا ذِكْرَى لِلْبَشَرِ ﴿31﴾ كَلَّا وَالْقَمَرِ ﴿32﴾ وَاللَّيْلِ إِذْ أَدْبَرَ ﴿33﴾ وَالصُّبْحِ إِذَا أَسْفَرَ ﴿34﴾ إِنَّهَا لَإِحْدَى الْكُبَرِ ﴿35﴾ نَذِيرًا لِّلْبَشَرِ ﴿36﴾ لِمَن شَاء مِنكُمْ أَن يَتَقَدَّمَ أَوْ يَتَأَخَّرَ ﴿37﴾ كُلُّ نَفْسٍ بِمَا كَسَبَتْ رَهِينَةٌ ﴿38﴾ إِلَّا أَصْحَابَ الْيَمِينِ ﴿39﴾ فِي جَنَّاتٍ يَتَسَاءلُونَ ﴿40﴾ عَنِ الْمُجْرِمِينَ ﴿41﴾ مَا سَلَكَكُمْ فِي سَقَرَ ﴿42﴾ قَالُوا لَمْ نَكُ مِنَ الْمُصَلِّينَ ﴿43﴾ وَلَمْ نَكُ نُطْعِمُ الْمِسْكِينَ ﴿44﴾ وَكُنَّا نَخُوضُ مَعَ الْخَائِضِينَ ﴿45﴾ وَكُنَّا نُكَذِّبُ بِيَوْمِ الدِّينِ ﴿46﴾ حَتَّى أَتَانَا الْيَقِينُ ﴿47﴾ فَمَا تَنفَعُهُمْ شَفَاعَةُ الشَّافِعِينَ ﴿48﴾ فَمَا لَهُمْ عَنِ التَّذْكِرَةِ مُعْرِضِينَ ﴿49﴾ كَأَنَّهُمْ حُمُرٌ مُّسْتَنفِرَةٌ ﴿50﴾ فَرَّتْ مِن قَسْوَرَةٍ ﴿51﴾ بَلْ يُرِيدُ كُلُّ امْرِئٍ مِّنْهُمْ أَن يُؤْتَى صُحُفًا مُّنَشَّرَةً ﴿52﴾ كَلَّا بَل لَا يَخَافُونَ الْآخِرَةَ ﴿53﴾ كَلَّا إِنَّهُ تَذْكِرَةٌ ﴿54﴾ فَمَن شَاء ذَكَرَهُ ﴿55﴾ وَمَا يَذْكُرُونَ إِلَّا أَن يَشَاء اللَّهُ هُوَ أَهْلُ التَّقْوَى وَأَهْلُ الْمَغْفِرَةِ ﴿56﴾

قرآن کریم
ترجمہ
اللہ کے نام سے جو بہت رحم والا نہایت مہربان ہے

اے چادر اوڑھ کر لیٹنے والے (1) اٹھئے اور متنبہ کیجئے (2) اور اپنے پروردگار کی بڑائی کا اعلان کیجئے (3) اور اپنے کپڑوں کو پاک رکھیئے (4) اور نجاست سے بچتے رہئے (5) اور احسان نہ کیجئے زیادہ حاصل کرنے کیلئے (6) اور اپنے پروردگار کے لئے صبروبرداشت سے کام لیجئے (7) توجب صور پھونکا جائے گا (8) تو یہ جس دن ہو گا بڑا دشوار دن ہو ا (9) کافروں پروہ کوئی معمولی نہ ہو گا (10) چھوڑ دو مجھے اور اسے جسے میں نے تنہا پیدا کیا (11) اور اس کے لئے بڑا پھیلا ہوا مال وزر میں نے قرار دیا (12) اور بیٹے کہ جو ہر وقت موجود رہتے ہیں (13) اور ہر طرح کی آسانیوں کا سامان اس کے لئے فراہم کیا (14) پھر بھی وہ لالچ رکھتا ہے کہ میں اسے اور زیادہ دوں (15) ہرگز نہیں وہ ہماری آیتوں سے جان بوجھ کر دشمنی کرنے والا ہے (16) میں تو اب جلد اسے سخت عذاب کی راہ پرلے جاؤں گا (17) اس نے سوچا کہ اندازہ کر کے کیا بات کہے (18) تو اس کی جان لی جائے کیا اس نے اندازہ لگایا (19) پھر (سنو) اس کی جان لی جائے کہ اس نے کیسا اندازہ لگایا (20) پھر اس نے غور سے دیکھا (21) پھر اس نے منہ سکیڑا اور نفرت کی صورت بنائی (22) پھر (سچائی کی طرف سے) پیٹھ پھیری اور غرور سے کام لیا (23) تو کہنے لگا یہ بس (لوگوں سے) سنا سنایا ہوا جادو ہے (24) یہ نہیں ہے مگر آدمیوں کا کلام (25) بہت جلدی میں اسے دوزخ کا مزہ چکھاؤں گا (26) اور تم کیا جانو کہ دوزخ کیا چیز ہے؟(27) وہ رحم نہیں کرتا اور نہیں چھوڑتا (28) وہ کھالوں کو جلا کر سیاہ کر دینے والا (29) اور پر انیس کارکن مقرر ہیں (30) اور ہم نے آتش جہنم کے ان کارکنوں کونہیں بنایا ہے مگر فرشتہ اور ان کی تعداد کو نہیں قرار دیا ہے مگر آزمائشوں کا ذریعہ کافروں کے لئے تا کہ جنہیں پہلے کتاب عطا ہو چکی ہے انہیں یقین آ جائے اور جو ایمان لائے ہیں ان کے ایمان میں اضافہ ہو اور جنہیں کتاب عطا ہوئی ہے اور جو باایمان ہیں وہ کسی شک وشبہ میں گرفتار نہ ہوں اور وہ جن کے دلوں میں بیماری ہے اور کافر لوگ نہ کہیں کہ اللہ کا اس بیان سے کیا مطلب ہے؟ اس طرح اللہ گمراہی میں ڈال دیتا ہے جسے چاہتا ہے اور ہدایت کرتا ہے جس کی چاہتا ہے اور تمہارے پروردگار کے لشکروں کو کوئی نہیں جانتا سوا خود اس کے اور یہ نہیں ہے مگر نصیحت انسانوں کے لئے (31) ہرگز نہیں قسم ہے چاند کی (32) اور رات کی جب وہ پیٹھ پھرائے (33) اور صبح کی جب وہ روشن ہو (34) بلاشبہ وہ ایک بہت بڑی چیز ہے (35) وہ متنبہ کرنے والی ہے انسانوں کو (36) ان کے لئے جو چاہے تم میں سے آگے بڑھے یا پیچھے رہے (37) ہر شخص اپنے اعمال کے ساتھ گروی ہے (38) سوا دائیں طرف والوں کے (39) کہ وہ بہشتوں میں ہوں گے سوال وجواب کرتے ہوں گے (40) گنہگاروں سے (41) کہ تمہیں کیا بات دوزخ میں لے گئی؟(42) وہ کہیں گے ہم نمازیوں میں داخل نہ تھے (43) اور غریب محتاج کو کھانا نہیں دیتے تھے (44) اور ہم بے ہودہ باتیں کرنے والوں میں شامل ہو کر بے ہودہ چرچے کرنے لگتے تھے (45) اور ہم روز جزا کو جھوٹ کہتے رہے (46) یہاں تک کہ یہ یقینی منزل ہمارے سامنے آ گئی (47) یہ لوگ ایسے ہیں کہ انہیں شفاعت کرنے والوں کی شفاعت فائدہ نہیں پہنچائے گی (48) تو انہیں کیا ہے کہ وہ نصیحت سے روگردانی کرتے ہیں (49) جیسے وہ وحشی گدھے ہیں (50) جو کسی شیر سے بھاگے ہوں (51) بلکہ ہر ایک ان میں سے چاہتا ہے کہ (براہِ راست خود) اسے کھلی ہوئی کتابیں دی جائیں (52) ہرگز نہیں بلکہ وہ آخرت کا خوف نہیں رکھتے (53) ہرگز نہیں یہ ایک نصیحت ہے (54) تو جو چاہے وہ اسے یاد رکھے (55) اور وہ یاد نہیں رکھیں گے جب تک کہ اللہ کو منظور نہ ہو وہ ڈرے جانے کا حقدار ہے اور وہ بخشش والا ہے (56)


پچھلی سورت:
سورہ مزمل
سورہ 74 اگلی سورت:
سورہ قیامہ
قرآن کریم

(1) سورہ فاتحہ (2) سورہ بقرہ (3) سورہ آل عمران (4) سورہ نساء (5) سورہ مائدہ (6) سورہ انعام (7) سورہ اعراف (8) سورہ انفال (9) سورہ توبہ (10) سورہ یونس (11) سورہ ہود (12) سورہ یوسف (13) سورہ رعد (14) سورہ ابراہیم (15) سورہ حجر (16) سورہ نحل (17) سورہ اسراء (18) سورہ کہف (19) سورہ مریم (20) سورہ طہ (21) سورہ انبیاء (22) سورہ حج (23) سورہ مؤمنون (24) سورہ نور (25) سورہ فرقان (26) سورہ شعراء (27) سورہ نمل (28) سورہ قصص (29) سورہ عنکبوت (30) سورہ روم (31) سورہ لقمان (32) سورہ سجدہ (33) سورہ احزاب (34) سورہ سباء (35) سورہ فاطر (36) سورہ یس (37) سورہ صافات (38) سورہ ص (39) سورہ زمر (40) سورہ غافر (41) سورہ فصلت (42) سورہ شوری (43) سورہ زخرف (44) سورہ دخان (45) سورہ جاثیہ (46) سورہ احقاف (47) سورہ محمد (48) سورہ فتح (49) سورہ حجرات (50) سورہ ق (51) سورہ ذاریات (52) سورہ طور (53) سورہ نجم (54) سورہ قمر (55) سورہ رحمن (56) سورہ واقعہ (57) سورہ حدید (58) سورہ مجادلہ (59) سورہ حشر (60) سورہ ممتحنہ (61) سورہ صف (62) سورہ جمعہ (63) سورہ منافقون (64) سورہ تغابن (65) سورہ طلاق (66) سورہ تحریم (67) سورہ ملک (68) سورہ قلم (69) سورہ حاقہ (70) سورہ معارج (71) سورہ نوح (72) سورہ جن (73) سورہ مزمل (74) سورہ مدثر (75) سورہ قیامہ (76) سورہ انسان (77) سورہ مرسلات (78) سورہ نباء (79) سورہ نازعات (80) سورہ عبس (81) سورہ تکویر (82) سورہ انفطار (83) سورہ مطففین (84) سورہ انشقاق (85) سورہ بروج (86) سورہ طارق (87) سورہ اعلی (88) سورہ غاشیہ (89) سورہ فجر (90) سورہ بلد (91) سورہ شمس (92) سورہ لیل (93) سورہ ضحی (94) سورہ شرح (95) سورہ تین (96) سورہ علق (97) سورہ قدر (98) سورہ بینہ (99) سورہ زلزال (100) سورہ عادیات (101) سورہ قارعہ (102) سورہ تکاثر (103) سورہ عصر (104) سورہ ہمزہ (105) سورہ فیل (106) سورہ قریش (107) سورہ ماعون (108) سورہ کوثر (109) سورہ کافرون (110) سورہ نصر (111) سورہ مسد (112) سورہ اخلاص (113) سورہ فلق (114) سورہ ناس


متعلقہ مآخذ

پاورقی حاشیے

  1. دانشنامه قرآن و قرآن پژوهی، ج2، ص1259۔


مآخذ