سورہ شمس

ویکی شیعہ سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
بلد سورۂ شمس لیل
سوره شمس.jpg
ترتیب کتابت: 91
پارہ : 30
نزول
ترتیب نزول: 26
مکی/ مدنی: مکی
اعداد و شمار
آیات: 15
الفاظ: 54
حروف: 253

سورہ شمس [سُوْرَةُ الشَّمْسِ] قرآن کریم کی مکی سورتوں میں سے ہے جو ترتیب مصحف کے لحاظ سے اکانوےویں اور ترتیب نزول کے لحاظ سے چھبیسویں سورت ہے۔ اس کا آغاز چونکہ شمس (بمعنی سورج) کی قسم کھائی گئی ہے چنانچہ اس کو "سورہ شمس" نام دیا گیا ہے۔ یہ سورت تزکیہ اور تہذیب نفس جیسے اخلاقی موضوعات پر تاکید کرتی ہے اور حضرت صالح(ع) اور ان کی ناقہ اور قوم ثمود کے ہاتھوں اس اس کے پےکر ڈالے جانے (اور اس کی کونچیں کاٹےجانے) اور اس قوم کے انجام پر مشتمل داستان کو نقل کرتی ہے۔

نام

  • اس سورت کو اس لئے سورہ شمس کہا جاتا ہے کہ اس کے آغاز میں خداوند متعال سورج کی قسم کھائی ہے:
" وَالشَّمْسِ وَضُحَاهَا ﴿1﴾" ترجمہ: قسم سورج اور اس کی پھیلتی ہوئی شعاعوں کی۔
  • اس سورت کا دوسرا نام ناقۂ صالح ہے اس لئے کہ اس میں صالح(ع) اور ان کی اونٹنی کی داستان کی طرف اشارہ کیا گیا ہے۔

کوائف

  • اس سورت کی آیات کی تعداد 15 اور بعض قراء کے مطابق 16 ہے لیکن پہلی رائے مشہور ہے۔
  • اس سورت کے الفاظ اور حروف کی تعداد بالترتیب 54 اور 253 ہے۔
  • ترتیب مصحف کے لحاظ سے اکانوےویں اور ترتیب نزول کے لحاظ سے چھبیسویں سورت ہے۔
  • یہ سورت مفصلات نیز اوساط کے زمرے میں آتی ہے۔
  • سورہ شمس قسم کی حامل سورتوں میں اٹھارہویں نمبر پر ہے اور اس کے آغاز میں 11 اشیاء کی قسم کھائی گئے ہے:

"سورج اور اس کی پھیلتی ہوئی شعاعوں، چاند کی، دن کی، رات کی، آسمان کی، اور اس کی جس نے اس کی عمارت قائم کی، زمین کی، اور جس نے اس کا بچھونا بچھایا، انسانی نفس کی اور جس نے اس میں توازن پیدا کیا"۔

مفاہیم

  • یہ سورت تزکیہ اور تہذیب نفس پر تاکید کرتی اور نفس کی پاکیزگی کو فلاح و رستگاری کا سرمایہ اور غیر مہذب ہونے کو ناامیدی کا سبب سمجھتی ہے۔
  • اس سورت کے آخر میں حضرت صالح(ع) اور ناقۂ صالح اور [[قوم ثمود کے ہاتھوں صالح کی اونٹنی کی کونچیں کاٹے جانے کی طرف اشارہ کیا گیا ہے۔[1]
سورہ شمس کے مضامین[2]
 
 
تزکیہ نفس نہ کرنے کے آثار
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
اجتماعی آثار: آیہ ۱۱-۱۵
معاشرے کی ہلاکت اور بگاڑ
 
فردی آثار: آیہ ۱-۱۰
سعادت سے محرومی
 
 
 
 
 
 
 
 
پہلا مطلب: آیہ ۱۱-۱۳
پیروی قوم ثمود از فردی پلید
 
پہلا مطلب: آیہ ۱-۸
نفس کے متضاد حالات اور متضاد چیزوں کی قسم
 
 
 
 
 
 
 
 
دوسرا مطلب: آیہ ۱۴-۱۵
قوم ثمود کی ہلاکت اور نابودی
 
دوسرا مطلب: آیہ ۹-۱۰
انسانی کی سعادت میں تزکیہ نفس کا اثر


متن سورہ

سوره شمس مکیہ ۔ نمبر 91 ۔ آیات 15 ترتیب نزول 26
ترجمہ
بِسْمِ اللَّـهِ الرَّ‌حْمَـٰنِ الرَّ‌حِيمِ

وَالشَّمْسِ وَضُحَاهَا ﴿1﴾ وَالْقَمَرِ إِذَا تَلَاهَا ﴿2﴾ وَالنَّهَارِ إِذَا جَلَّاهَا ﴿3﴾ وَاللَّيْلِ إِذَا يَغْشَاهَا ﴿4﴾ وَالسَّمَاء وَمَا بَنَاهَا ﴿5﴾ وَالْأَرْضِ وَمَا طَحَاهَا ﴿6﴾ وَنَفْسٍ وَمَا سَوَّاهَا ﴿7﴾ فَأَلْهَمَهَا فُجُورَهَا وَتَقْوَاهَا ﴿8﴾ قَدْ أَفْلَحَ مَن زَكَّاهَا ﴿9﴾ وَقَدْ خَابَ مَن دَسَّاهَا ﴿10﴾ كَذَّبَتْ ثَمُودُ بِطَغْوَاهَا ﴿11﴾ إِذِ انبَعَثَ أَشْقَاهَا ﴿12﴾ فَقَالَ لَهُمْ رَسُولُ اللَّهِ نَاقَةَ اللَّهِ وَسُقْيَاهَا ﴿13﴾ فَكَذَّبُوهُ فَعَقَرُوهَا فَدَمْدَمَ عَلَيْهِمْ رَبُّهُم بِذَنبِهِمْ فَسَوَّاهَا ﴿14﴾ وَلَا يَخَافُ عُقْبَاهَا ﴿15﴾


اللہ کے نام سے جو بہت رحم والا نہایت مہربان ہے

قسم سورج اور اس کی پھیلتی ہوئی شعاعوں کی (1) اور چاند کی جب وہ اس کے پیچھے سامنے آتا ہے (2) اور دن کی جب کہ وہ اس سورج کو نمایاں کرتا ہے (3) اور رات کی جب کہ وہ اسے ڈھانپ لیتی ہے (4) اور آسمان کی اور اس کی جس نے اس کی عمارت قائم کی (5) اور زمین کی اور جس نے اس کا بچھونا بچھایا (6) اور انسانی نفس کی اور جس نے اس میں توازن پیدا کیا (7) تو اس نے اس میں اس کے برے کردار اور اچھے کردار کا القا کر دیا (8) ہر طرح کی بہتری حاصل کی اس نے جس نے اسے پاک صاف بنایا (9) اور ناکام ہوا وہ جس نے اسے پامال کر دیا (10) قبیلہ ثمود نے اپنی سرکشی کی وجہ سے جھٹلایا (11) جب اس میں کا سب سے زیادہ بدبخت آدمی اٹھا (12) تو ان لوگوں سے اللہ کے پیغمبر نے تو یہ کہا تھا کہ اللہ کی اونٹنی کا خیال رکھنا اور اس کے پانی پینے کا (13) مگر ان لوگوں نے انہیں جھٹلایا تو اسے پے کر ڈالا جس پر ان کے پروردگار نے ان پر آفت ڈال دی (14) کہ اس بستی کو زمین کے برابر کر دیا اور خدا کو اس کے انجام کا کوئی اندیشہ نہیں ہے (15)


پچھلی سورت:
سورہ بلد
سورہ 91 اگلی سورت:
سورہ لیل
قرآن کریم

(1) سورہ فاتحہ (2) سورہ بقرہ (3) سورہ آل عمران (4) سورہ نساء (5) سورہ مائدہ (6) سورہ انعام (7) سورہ اعراف (8) سورہ انفال (9) سورہ توبہ (10) سورہ یونس (11) سورہ ہود (12) سورہ یوسف (13) سورہ رعد (14) سورہ ابراہیم (15) سورہ حجر (16) سورہ نحل (17) سورہ اسراء (18) سورہ کہف (19) سورہ مریم (20) سورہ طہ (21) سورہ انبیاء (22) سورہ حج (23) سورہ مؤمنون (24) سورہ نور (25) سورہ فرقان (26) سورہ شعراء (27) سورہ نمل (28) سورہ قصص (29) سورہ عنکبوت (30) سورہ روم (31) سورہ لقمان (32) سورہ سجدہ (33) سورہ احزاب (34) سورہ سباء (35) سورہ فاطر (36) سورہ یس (37) سورہ صافات (38) سورہ ص (39) سورہ زمر (40) سورہ غافر (41) سورہ فصلت (42) سورہ شوری (43) سورہ زخرف (44) سورہ دخان (45) سورہ جاثیہ (46) سورہ احقاف (47) سورہ محمد (48) سورہ فتح (49) سورہ حجرات (50) سورہ ق (51) سورہ ذاریات (52) سورہ طور (53) سورہ نجم (54) سورہ قمر (55) سورہ رحمن (56) سورہ واقعہ (57) سورہ حدید (58) سورہ مجادلہ (59) سورہ حشر (60) سورہ ممتحنہ (61) سورہ صف (62) سورہ جمعہ (63) سورہ منافقون (64) سورہ تغابن (65) سورہ طلاق (66) سورہ تحریم (67) سورہ ملک (68) سورہ قلم (69) سورہ حاقہ (70) سورہ معارج (71) سورہ نوح (72) سورہ جن (73) سورہ مزمل (74) سورہ مدثر (75) سورہ قیامہ (76) سورہ انسان (77) سورہ مرسلات (78) سورہ نباء (79) سورہ نازعات (80) سورہ عبس (81) سورہ تکویر (82) سورہ انفطار (83) سورہ مطففین (84) سورہ انشقاق (85) سورہ بروج (86) سورہ طارق (87) سورہ اعلی (88) سورہ غاشیہ (89) سورہ فجر (90) سورہ بلد (91) سورہ شمس (92) سورہ لیل (93) سورہ ضحی (94) سورہ شرح (95) سورہ تین (96) سورہ علق (97) سورہ قدر (98) سورہ بینہ (99) سورہ زلزال (100) سورہ عادیات (101) سورہ قارعہ (102) سورہ تکاثر (103) سورہ عصر (104) سورہ ہمزہ (105) سورہ فیل (106) سورہ قریش (107) سورہ ماعون (108) سورہ کوثر (109) سورہ کافرون (110) سورہ نصر (111) سورہ مسد (112) سورہ اخلاص (113) سورہ فلق (114) سورہ ناس


متعلقہ مآخذ

پاورقی حاشیے

  1. دانشنامه قرآن و قرآن پژوهی، ج2، ص1264۔
  2. خامہ‌گر، محمد، ساختار سورہ‌ہای قرآن کریم، تہیہ مؤسسہ فرہنگی قرآن و عترت نورالثقلین، قم، نشر نشرا، چ۱، ۱۳۹۲ش.


مآخذ