صفحۂ اول

منتخب مضمون

سنہ 61 ہجری "روز عاشورا کے واقعات" میں امام حسینؑ اور آپ کے ساتھیوں کی شہادت، لشکر عمر سعد کی طرف سے خیموں کو آگ لگانا اور غارت کرنا اور اسیران کربلا کی اسیری شامل ہیں۔ تاریخی نقل کے مطابق دونوں طرف کی فوج صبح کی نماز کے بعد نبرد آزمائی کے لیے تیار ہوئی۔ جنگ شروع ہونے سے پہلے امام حسینؑ اور بُرَیر نے دشمن کی فوج کو وعظ و نصیحت کی۔ امامؑ نے اپنے ساتھیوں کو جنگ میں پہل کرنے سے منع فرمایا تھا۔ اس بنا پر پہلا تیر عمر سعد نے امام کی فوج کی طرف پھینکا۔ شروع میں حملے گروہ کی شکل میں تھے اور ان حملوں میں امام حسینؑ کے بہت سارے ساتھی شہید ہو گئے۔ اس کے بعد امامؑ کے ساتھی ایک ایک ہو کر میدان میں چلے گئے۔ ظہر کے وقت امامؑ نے ظہر کی نماز پڑھنے کا ارادہ کیا تو زہیر بن قین اور سعید بن عبد اللہ حنفی امام اور ان کے ساتھیوں کے محافظ بنے اور سعید بن عبداللہ نے جام شہادت نوش کیا۔ مزید جنگ جاری رہی اور بنی ہاشم میں پہلا شہید علی اکبر تھے اور ابوالفضل العباسؑ کی ذمہ داری خیموں میں پانی لانا تھا اور فرات پر موجود پہرہ داروں سے جنگ کرتے ہوئے شہید ہوئے۔ جب امام حسینؑ نے شیخوار طفل علی‌اصغر کو ہاتھوں پر اٹھایا اور اپنے نونہال کی تشنگی کی شکایت کی تو دشمن نے علی اصغر کے حلقوم کو تیر کا نشانہ بنالیا۔ امام کے تمام انصار اور بنی‌ہاشم کے تمام جوانوں کی شہادت کے بعد امام حسینؑ خود میدان کو نکلے۔ شمر کی سربراہی میں موجود پیدل فوج نے امام کو گھیرے میں ڈالا لیکن آگے نہ آسکے اور شمر ان کی تشویق کر رہا تھا۔ دشمن کی فوج نے امام کو تیروں کی زد پر لیا اور شمر اور اس کی فوج نے امام حسینؑ پر حملہ کیا اور شہید کردیا۔ جب امام حسین میدان کی طرف جا رہے تھے تو امام سجادؑ نے بھی میدان کی طرف جانے کا ارادہ ظاہر کیا لیکن بیماری کی وجہ سے نہ جاسکے۔ جب دشمن نے خیموں کا تاراج کیا تو شمر امام زین العابدینؑ کو قتل کرنا چاہتا تھا لیکن حضرت زینب مانع بنی۔ دشمنوں نے امام حسینؑ اور ان کے ساتھیوں کا سر تن سے جدا کر کے ابن زیاد کو بھیجا اور بدن پر گھوڑے دوڑایے۔ عمر سعد فوج کے بعض افراد کے ساتھ اس رات کربلا میں رکا اور اگلے دن ظہر کے قریب اپنی فوج کے جنازوں کو دفن کرنے کے بعد اسراء اہل بیتؑ کے ساتھ کوفہ کی طرف نکلا۔

مزید پڑھ ...

کیا آپ جانتے ہیں؟ ...

  • ... کہ عراق میں بعث پارٹی کی طرف سے مشی اربعین کی مخالفت کے بعد سید محمد صدر (تصویر میں) نے کربلا کی مشی کو واجب قرار دیا تھا؟
  • ... کہ امام مہدیؑ کی شادی کے قائل بعض علما نے اپنی بات کو ثابت کرنے کے لئے کچھ ایسی روایات سے استناد کرتے ہیں جن میں امام کے بچوں کے نام ذکر ہوئے ہیں؟
  • ... کہ معاد کے بارے میں زرتشتیوں کا عقیدہ ہے کہ جہنم میں آگ نہیں بلکہ بہت ٹھنڈی، تاریک اور وحشتناک جگہ ہے۔؟
  • ‌... علامہ حلی نے اہل سنت عالم دین کے ساتھ مناظرے میں امام علیؑ کی امامت اور شیعہ مذہب کی حقانیت ثابت کی جس کی وجہ سے بادشاہ نے شیعہ مذہب اختیار کیا اور اپنے نام کو سلطان محمد خدابندہ رکھا؟

مجوزہ مضامین

شب ضربت امام علی علیہ السلام
  • خطبہ شعبانیہ « پیغمبر اکرمؐ کے اس خطبے کو کہا جاتا ہے جس میں آپ نے رمضان کی فضلیت بیان فرمائی ہے۔ چونکہ یہ خطبہ ماہ شعبان کے آخری جمعہ کو ارشاد فرمایا اس لئے "خطبہ شعبانیہ" کے نام سے مشہور ہے۔»
  • مُبطِلات روزہ « ان امور کو کہا جاتا ہے جن کی انجام دہی روزے کو باطل کرتی ہے۔ بسا اوقات روزہ باطل کرنے سے کفارہ واجب ہوتا ہے۔»
  • شب قدر «مسلمانوں کے درمیان سال کی سب سے زیادہ فضیلت والی رات ہے جس میں قرآن نازل ہوا اور ہزار مہینوں سے افضل رات ہے۔»
  • فطرہ «مالی واجبات میں سے ایک ہے جسے عید فطر کے دن ادا کیا جاتا ہے۔ فطرہ کی مقدار ہر شخص کے لئے تین کلو ہے۔»

فہرست

تاریخ(14 ز، 5 ص)
ثقافت(9 ز)
جغرافیہ(6 ز، 2 ص)
زمانہ(3 ز)
سیاست(7 ز)
عقائد(10 ز، 7 ص)
علوم(7 ز، 1 ص)
فائلیں(خالی)
معاشرہ(5 ز)
مفاہیم(2 ز، 1 ص)
موجودات(3 ز)
افراد(22 ز، 1 ص)

آئینہ تاریخ

22 جولائی


16 محرم


ہفتے کی منتخب تصویر

پاکستان کے شہر ملتان کا دو سو سال پرانا استاد کا تعزیہ
پاکستان کے شہر ملتان کا دو سو سال پرانا استاد کا تعزیہ
پاکستان کے شہر ملتان کا دو سو سال پرانا استاد کا تعزیہ
زبان