نیت

ویکی شیعہ سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

نیت کے معنی خدا کے لئے کام انجام دینے کا ارادہ اور قصد کرنا ہے۔ روایات کے مطابق، ہر کام کی اہمیت اس کی نیت سے معلوم ہوتی ہے۔ روایت کی کتابوں میں، نیت کو اصل اور اعمال کا ثمرہ کہا گیا ہے اور مسلمانوں کو پاک اور مخلصانہ نیت رکھنے کی تاکید کی گئی ہے اور کہا گیا ہے کہ خراب اور بری نیت رزق میں کمی، اور بلا و مصیبت کے نازل ہونے کا سبب بنتی ہے۔ اسی لئے شیعہ فقہاء کے قول کے مطابق، عبادات میں نیت کرنا ضروری ہے، اور یہ نماز کے ارکان سے ہے۔ نیت کا زبان پر لانا ضروری نہیں ہے۔

معنا

نیت کا لفظی معنی قصد، ارادہ ،عزم اور اندیشہ کہا گیا ہے۔ [1] اور اصطلاحی معنی وہ قصد اور ارادہ ہے جو انسان کو کسی چیز کی طرف مائل کرتا ہے۔ [2] محقق طوسی سے نقل ہوا ہے کہ نیت کسی فعل کو انجام دینے کا ارادہ اور علم و عمل کے درمیان واسطہ ہے۔ [3] مصباح یزدی نے نیت کی تعریف یوں کی ہے: اختیار اور آگاہی رکھتے ہوئے کسی کام کو انجام دینا۔ [4]

منزلت

روایات کے مطابق، ہر کام کی اہمیت اس کی نیت سے معلوم ہوتی ہے۔ [5] اور اگر نیت میں ریا پائی جائے تو یہ عمل کے باطل ہونے کا سبب بنتی ہے، لیکن اگر کوئی کام خالص نیت سے اور خداوند کے لئے انجام دیا جائے، تو یہ عمل کو کمال تک پہنچانے کا باعث بنتا ہے، [6]معروف حدیث کے مطابق انما الاعمال بالنیات، اعمال کا دارومدار نیت پر ہے، [7] معصومین(ع) نے بہت سی روایات میں پاک اور خالص نیت کی تاکید کی ہے اور فرمایا ہ