شیخ صدوق

ویکی شیعہ سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
شیخ صدوق
شیخ صدوق کا مقبرہ
نام محمد بن علی ابن بابویہ قمی
کنیت ابوجعفر
لقب شیخ صدوق
تاریخ ولادت تقریبا سنہ 305 ہجری
شہر شہر ری، ایران
محل تحصیل شہر قم و شہر ری
وفات/شہادت سنہ 381 ہجری
مدفن شہر ری
تالیفات من لایحضرہ الفقیہ، معانی الاخبار، عیون الاخبار، الخصال، علل الشرائع، صفات الشیعۃ، ثواب الاعمال، کمال الدین و تمام النعمۃ (کتاب)، المقنع فی الفقہ،...

محمد بن علی بن حسین بن موسی بن بابویہ قمی (305۔381 ھ)، شیخ صدوق کے نام سے معروف چوتھی صدی ہجری کے شیعہ علماء میں سے تھے۔ آپ کا شمار شہر مقدس قم کے مایہ ناز محدثوں میں ہوتا ہے اور تقریبا 300 سے زائد علمی آثار کی آپ کی طرف نسبت دی جاتی ہے جن میں سے اکثر آج ہمارے اختیار میں نہیں ہیں۔ کتاب من لایحضرہ الفقیہ شیعوں کی معتبر ترین کتب اربعہ میں سے ایک ہے جو آپ کے دست مبارک سے لکھی گئی ہے۔ ان کے دیگر علمی آثار میں