"محمد بن جعفر المشہدی" کے نسخوں کے درمیان فرق

ویکی شیعہ سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
م (مآخذ)
(شاگرد)
 
(ایک ہی صارف کا ایک درمیانی نسخہ نہیں دکھایا گیا)
سطر 16: سطر 16:
 
{{ستون خ}}
 
{{ستون خ}}
  
 +
[[ملف:کتاب المزار الکبیر.jpg|thumbnail|کتاب المزار الکبیر]]
 
==شاگرد==
 
==شاگرد==
 
ان کے بعض راویوں اور شاگردوں کے نام حسب ذیل ہیں:
 
ان کے بعض راویوں اور شاگردوں کے نام حسب ذیل ہیں:
سطر 23: سطر 24:
 
# [[علی بن حسین بن حماد واسطی|على بن الحسين بن حماد الواسطى]]
 
# [[علی بن حسین بن حماد واسطی|على بن الحسين بن حماد الواسطى]]
 
# [[ہبة اللہ بن سلمان]].<ref>المزار الکبیر، ص 16.</ref>
 
# [[ہبة اللہ بن سلمان]].<ref>المزار الکبیر، ص 16.</ref>
[[ملف:کتاب المزار الکبیر.jpg|thumbnail|کتاب المزار الکبیر]]
 
 
{{ستون خ}}
 
{{ستون خ}}
 +
 
==مشاہیر کی نظر میں==
 
==مشاہیر کی نظر میں==
 
[[شیخ حر عاملی]] ان کے بارے میں کہتے ہیں: شیخ محمد بن جعفر مشہدی، فاضل، محدث اور بہت سچے ہیں جن کی کئی تالیفات ہیں اور [[شاذان بن جبرئیل قمی]] سے روایت کرتے ہیں۔
 
[[شیخ حر عاملی]] ان کے بارے میں کہتے ہیں: شیخ محمد بن جعفر مشہدی، فاضل، محدث اور بہت سچے ہیں جن کی کئی تالیفات ہیں اور [[شاذان بن جبرئیل قمی]] سے روایت کرتے ہیں۔
سطر 47: سطر 48:
  
 
[[fa:محمد بن جعفر المشهدی]]
 
[[fa:محمد بن جعفر المشهدی]]
 +
[[ar:محمد بن جعفر المشهدي]]
 
[[en:Muhammad b. Ja'far al-Mashhadi]]
 
[[en:Muhammad b. Ja'far al-Mashhadi]]
  
 
[[زمرہ:چھٹی صدی ہجری کے شیعہ علما]]
 
[[زمرہ:چھٹی صدی ہجری کے شیعہ علما]]
 
[[زمرہ:چھٹی صدی ہجری کے شیعہ محدثین]]
 
[[زمرہ:چھٹی صدی ہجری کے شیعہ محدثین]]

حالیہ نسخہ بمطابق 07:07, 14 فروری 2019

ابو عبداللّہ محمد بن جعفر بن على المشہدى الحائرى المعروف بہ محمد بن مشہدی اور ابن مشہدى چھٹی صدی ہجری کے شیعہ علماء میں سے ہیں۔ وہ حدیث کے مشہور مشائخ میں سے ہیں اور ان کا نام بہت سی اجازات میں دیکھا جاسکتا ہے ہرچند ان کی شخصیت کے بارے میں کافی شافی معلومات دستیاب نہیں ہیں۔ اصحاب امامیہ (علمائے شیعہ) نے ان کی کتاب "المزار الکبیر پر اعتماد اور اس کے مندرجات سے استناد کیا ہے۔

ابن المشہدی کی شخصیت

وہ جلیل القدر شیعہ علماء میں سے ہیں جو چھٹی صدی ہجری میں گذرے ہیں لیکن اس کے سوا ان کے بارے میں مزید معلومات دستیاب نہیں ہیں اور ان کی شخصیت ہمارے لئے تقریبا مجہول اور غیر معروف ہے حتی کہ سید ابوالقاسم خوئی کہتے ہیں: "محمد بن مشہدی کی شخصیت ہمارے لئے نامعلوم ہے۔[1]

مشائخ

ان کے بعض مشائخ اور اساتذہ کے نام:

کتاب المزار الکبیر

شاگرد

ان کے بعض راویوں اور شاگردوں کے نام حسب ذیل ہیں:

مشاہیر کی نظر میں

شیخ حر عاملی ان کے بارے میں کہتے ہیں: شیخ محمد بن جعفر مشہدی، فاضل، محدث اور بہت سچے ہیں جن کی کئی تالیفات ہیں اور شاذان بن جبرئیل قمی سے روایت کرتے ہیں۔

شہید اول ـ جو ابن المشہدی کی تمام کتب سے روایت کرتے ہیں ـ ان کے بارے میں تحریر کرتے ہیں: وہ اپنے زمانے کے نامی گرامی اور مشہور عالم دین ہیں۔[4]

آثار و تالیفات

  1. المزار الكبير، محمد بن جعفر مشہدی کی مشہور ترین کاوش ہے جو ائمۂ معصومین علیہم السلام کی زیارات کا مجموعہ ہے اور بہت سے شیعہ علماء نے ان پر اعتماد کیا ہے۔
  2. بغية الطالب
  3. ايضاح المناسک
  4. محدث نورى نے ان کی تالیفات کا تذکرہ کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ "المصباح" نامی کتاب بھی ان کی تالیفات میں سے ہے۔[5]

پاورقی حاشیے

  1. المزار الکبیر، ص7۔
  2. المزار الکبیر، ص12 – 14۔
  3. المزار الکبیر، ص 16.
  4. المزار الکبیر، ص5 و 6۔
  5. المزار الکبیر، ص 18 – 20. نرم افزار سیرہ معصومان۔


مآخذ

  • مشہدی، محمد بن جعفر، المزار الکبیر، تحقیق جواد قیومی، قم، نشر قیوم، 1412 ہجری قمری۔
  • مرکز تحقیقات علوم اسلامی، نرم افزار سیرہ معصومان.